مقبوضہ جموں وکشمیرمیں بھارتی فوجیوں کے ہاتھوں ایک اورکشمیری نوجوان شہید

سرینگر،اسلام آباد:مقبوضہ جموںوکشمیر کے ضلع کپواڑہ میں بارودی شیل پھٹنے سے ایک لڑکی جاں بحق جبکہ اس کی ماں شدید زخمی ہو گئی۔ پلوامہ میں بھارتی فوجیوںکے ہاتھوں ایک اور کشمیری نوجوان شہید ہوگیا،حریت رہنمائوں نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے صدر ولکن بوزکر کے کشمیر بارے حالیہ بیان کا خیرمقدم کیا  ہے،

سرینگر سے موصولہ رپورٹو ں کے مطابق ضلع کے علاقے شارہ کوٹ ویلگام میںایک خاتون اپنی بیٹی کے ہمراہ سبزی کی تلاش کیلئے جنگل گئی تھی جہاں انہیں ایک شیل پڑا ہوا ملا جو وہ اپنے ساتھ گھر لائیں ۔ گھر پہنچ کر جب انہوںنے بیگ کھولا تو اس دوران ایک زور دا دھماکہ ہوا جس کے نتیجے میں 49سالہ خاتون سارا بیگم اور اسکی بیٹی گلنازہ شدید زخمی ہو گئیں ۔ دونوںکو فوری طور پر ایک نزیکی ہسپتال پہنچایا گیا جہاں بیٹی دم توڑ بیٹھی جبکہ ماں کی حالت انتہائی نازک بتائی جاتی ہے،

علاوہ ازیں  قابض بھارتی فوجیوںنے اپنی ریاستی دہشت گردی کی تازہ کارروائی کے دوران جمعہ کو ضلع شوپیاں میں ایک کشمیری نوجوان وکو شہید کردیا ہے ۔فوجیوںنے نوجوان کو ضلع کے علاقے گنو پورہ  میں تلاشی اور محاصرے کی ایک کارروائی کے دوران شہید کیا۔ پولیس نے دعوی کیا کہ تصادم ضلع کے گنو پورہ گاوںمیں اس وقت شروع ہوگیا جب فورسز نے علاقے کو محاصرے میں لیکر تلاشی آپریشن شروع کیا۔اس دوران طرفین کا آمنا سامنا ہوا، اور دونوں نے ایک دوسرے کی طرف گولیاں چلائیں، آخری اطلاعات ملنے تک علاقے میں فوجی کارروائی جاری تھی ،ادھرحریت رہنمائوں نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے صدر ولکن بوزکرکے حالیہ بیان کا خیرمقدم کیا ہے

جس میں انہوں نے واضح طور پر کہا ہے کہ تنازعہ کشمیر کو اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قراردادوں کے مطابق حل کئے بغیر جموںوکشمیر کی متنازعہ حیثیت کو تبدیل نہیں کیا جانا چاہیے۔  جموںوکشمیر پیپلز لیگ کے چیئرمین مختار احمد وزہ نے سرینگر سے جاری ایک بیان میں کشمیر اور فلسطین کے دیرینہ تنازعات کے منصفانہ حل کیلئے بامعنی اور تعمیر ی کردار ادا کرنے پر پاکستان کی حکومت اور عوام کا شکریہ ادا کیا۔جموں و کشمیر ڈیموکریٹک فریڈم پارٹی کے قائم مقام چیئرمین محمود احمد ساغرنے اسلام آباد میں جاری ایک بیان میںجموںوکشمیر کی متنازعہ حیثیت کے بارے میں ولکن بوزکر کے بیان کو پاکستان اور جموںوکشمیر کے عوام کی بڑی سفارتی فتح قرار دیاہے۔

انہوں نے کہا کہ بوزکر کا یہ بیان بھارتی حکومت کیلئے چشم کشا ہے جو مقبوضہ جموں و کشمیر کے متنازعہ حیثیت کو تبدیل کرنے کے درپے ہے ۔محمود ساغر نے مقبوضہ جموںوکشمیر میںبھارتی حکومت کے اقدامات کو بین الاقوامی قانون کی سنگین خلاف ورزی قرار دیتے ہوئے کہا کہ اب وقت آگیا ہے کہ دنیا کو بھارت کی ہٹ دھرمی پر مبنی پالیسی اور جموںوکشمیر کی آبادی کے تناسب کو بگاڑنے کے مذموم منصوبوں کا نوٹس لینا چاہیے ۔انہوںنے تنازعہ کشمیر کے جلد پائیدار حل کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ عالمی برادری کو اقوام متحدہ کے سلامتی کونسل کی قراردادوں کے مطابق تنازعہ کشمیر کے حل کیلئے اپنا اہم کردار ادا کرنا چاہیے اور ان قراردادوں پر عمل درآمد نہ کرنے پر بھارت کو جواب دہ بنانا چاہیے ۔

محمود احمد ساغر نے کشمیر اور فلسطین کے دیرینہ تنازعات کے پر امن حل کیلئے پاکستان کے بامقصد اور تعمیری کردار کاخیرمقدم کیا۔انہوںنے بھارتی قابض فورسز کی طرف سے مقبوضہ جموںوکشمیرمیںکشمیری نوجوانوںکے قتل عام اور بڑے پیمانے پر جاری انسانی حقوق کی پامالیوںپر شدید تشویش ظاہر کی ہے ۔ انہوںنے عالمی برادری سے اپیل کی کہ وہ تنازعہ کشمیر کے حل میں مدد دیں جو خطے میں کشیدگی کی بنیادی وجہ ہے ۔ جموںوکشمیر پیپلز لیگ کے وائس چیئرمین سید اعجاز رحمانی نے اسلام آباد سے جاری ایک بیان میں اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے صدر ولکن بوزکرکے حالیہ بیان کا خیرمقدم کیا ہے اور اسے پاکستان کی سفارتی فتح قراردیا ہے 

Recommended For You

About the Author: admin