شہداء شوپیاں و ترال کو حزب کے سربراہ سید صلاح الدین احمد کا زبردست خراج عقیدت

شوپیان اور ترال علاقے میں دو الگ الگ معرکوں کے دوران مردانہ وار لڑتے ہوئے سات مجاہدین نے اللہ کی راہ میں اپنا قیمتی لہو نچھاور کرکے ایسی سنہری داستان رقم کی جس کی تاریخ میں کم ہی نظیر ملتی ہے۔مجاہدین سامان حرب و ضرب کم ہونے کے باوجود ایک طاقتور دشمن کا مقابلہ کررہے ہیں،اور دشمن کی سرنڈر کی پیش کش کر ٹھکراتے ہوئے اللہ کی راہ میں اپنا سر کٹانے کو ہی ترجیح دیتے ہیں۔ان خیالات کا اظہار جہاد کونسل کے چیئرمین اور حزب کے سربراہ سید صلاح الدین احمد نے پریس کے نام جاری اپنے ایک بیان میں کیا ہے۔انہوں نے شہداء شوپیاں و ترال کو زبردست خراج عقیدت  ادا کرتے ہوئے کہا کہ۔مجاہدین نے ان مقابلوں کے دوران آخری سانس تک لڑ کر شہیدوں کے ساتھ کیا گیا وعدہ وفا کردیا۔ لاکھوں شہدا کی قربانی ان شااللہ رائیگاں نہیں جائے گی۔ان شہداء میں ایک شہید کاشف بشیر میر ہیں جن کے دو بھائی پہلے آزادی کشمیر کیلئے جام شہادت نوش کرچکے ہیں  ۔دشمن اپنے تمام اوچھکے ہتھکنڈے آزما چکا ہے اسے آج تک کوئی کامیابی نہیں ملی ہے نہ وہ اپنے مذموم مقاصد میں کبھی کامیاب ہوگا۔انہوں نے کہا کہ کشمیری قوم سات دہائیوں سے بھارت کا مقابلہ نہتے ہاتھوں کررہی ہے اور آج بھی یہ قوم اپنے نوجوانوں کے شانہ بشانہ کھڑی سے اور امید ہے کہ ایک دن ضرور آئے گا کہ یہ قوم ان قربانیوں کے طفیل جو انہوں نے آج تک ایک اعلیٰ و ارفا مقصد کے کئے پیش کی ہیں،ان کا ثمر اس ستم رسیدہ قوم کو مل کر رہے گا۔یقین ہے شہدا کا مقدس لہو رنگ لائے گا اور دشمن کو مقبوضہ خطے سے خالی ہاتھ نکلنا پڑے گا ان شااللہ۔ سید صلاح الدین نے شہداء کی بلندی درجات اور پسماندگان کیلئے صبر جمیل کی دعا بھی کی ہے۔

Recommended For You

About the Author: admin