حزب چیف آپریشنل کمانڈر غلام حسن خان شہید

، غازیوں اور مجاہدین کے استاد ، ہردلعزیز چیف آپریشنل کمانڈر غلام حسن خان المعروف سییف الاسلام شہیدؒ کا یوم شہادت ہے ۔ کمانڈر سیف الاسلام شہیدؒ کا شمار جہاد کشمیر کے چوٹی کے راہنماؤں میں ہوتا ہے جنھوں نے اپنی بھادری ، اولوالعزمی ، جواں مردی کے ساتھ تحریک آزادی کو اوجِ کمال تک پہنچایا ۔ کمانڈر سیف الاسلام شہیدؒ پرعزم شخصیت ، پرجوش طبیعت ، عسکری بصیرت کے حامل انسان تھے جنھوں نے حزب المجاہدین کی کمانڈ اس وقت سنبھالی جب افغانستان میں امریکا اور اس کے اتحادی حملہ آور تھے اور تحریک آزادی کشمیر بدلتے عالمی حالات کے تناظر میں انتہائی دباؤ کا شکار تھی ۔ اس منظرنامہ کی وجہ سے بھارت نے تمام طرح وسائل کےساتھ اہلیانِ جموں کشمیر پر پوری شدت سے یلغار کر دی تھی ۔ لیکن مجاہدین نے کمانڈر سیف الاسلام شہیدؒ کی قیادت میں موثر اور ہند شکن کارروائیاں کر کے دشمن کی بزدلانہ جارحیت کا بھرپور جواب دیا ۔ 1997ء میں جموں کشمیر میں بھارتی ایجنسیوں کی کوششوں سے غداروں کی دو تنظیمیں اخوان المسلمین اور مسلم مجاہدین وجود میں آئیں ، ان سرکاری بندوق برداروں نے تحریک آزادی کے حمایتیوں پر انسانیت سوز مظالم ڈھائے تو کمانڈر سیف الاسلام شہیدؒ نے ان بھارتی آلہ کاروں کیخلاف خصوصی کارروائیاں کیں اور انہیں ان کے ابدی انجام تک پہنچایا ۔ کمانڈر سیف الاسلام شہیدؒ کو درندہ صفت بھارتی فوجیوں نے گرفتار کرنے کے بعد بدترین جسمانی اذیتیں دے کر 2 اپریل 2003ء کو سرینگر میں شہید کیا ۔ اللہ تعالیٰ شہدائے کرام کے درجات بلند فرمائے اور ھمیں شہدا کے مشن کو پایۂ تکميل تک پہنچانے کی توفیق عطا فرمائے آمین

کمانڈر غلام حسن خان المعروف سیف الاسلام شہیدؒ
تاریخ شہادت : 2 اپریل 2003ء
 مقام شہادت : سری نگر

Recommended For You

About the Author: admin