نریندر مودی نے نام نہاد بھارتی جمہوریت کا بھیانک روپ کھل کے سامنے لایا ہے۔

نریندر مودی نے نام نہاد  بھارتی جمہوریت کا بھیانک روپ کھل کے سامنے لایا ہے۔26جنوری کو بھارتی اس ڈرامے کو منانے سے اب پرہیز کریں۔کشمیری عوام نے کبھی اس دن کو اہمیت نہیں دی۔ان خیالات کا اظہار حزب سربراہ اور متحدہ جہاد کو نسل کے چیر میں سید صلاح الدین نے پریس کے نام جاری اپنے ایک بیان میں کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ نام نہاد جمہوریت کا بھیانک روپ،جس پر خودساختہ سیکولر ماسک چڑھایا گیا تھا،نریندر مودی نے ایک جھٹکے سے بے نقاب کرکے رکھدیا۔بھارت میں اب گاندھی نہیں بلکہ اس کے قاتل نتھو رام گوڑسے کو اب کھلے عام ہیرو قرار دیا جا چکا ہے۔نسلی،مذھبی اور علاقائی بنیادوں پر عام بھارتی عوام کو تشدد اور بربریت کا نشانہ بنایا جارہا ہے۔غیر ہندو سے عملاََ زندگی کا حق چھینا جاچکا ہے۔ان حالات میں پھر یوم جمہوریہ منانا مذاق نہیں تو اور کیا ہے۔سید صلاح الدین نے کہا کہ کشمیری عوام نے کبھی اس دن کو اہمیت نہیں دی۔اس دن کو مقبوضہ ریاست میں نفرت کی علامت کے طور پر منایا جاتا ہے اور اس سال بھی اسے نفرت کی علامت کے طور پر دیکھا جائیگا۔حزب سربراہ اور متحدہ جہاد کونسل کے چیر مین نے بھارت کو مشورہ دیا کہ وہ نوشتہ دیوار پڑھ لے،جابرانہ پالیسی کو ترک کرکے زمینی حقائق کا ادراک کرے  ورنہ، نہ صرف وہ اس خطے کے امن کیلئے ایک خطرہ بنتا جارہا ہے بلکہ وہ پوری دنیا کے امن کو تباہ کرنے پر تلا ہوا ہے۔عالمی برادری کو بھارت کی اس روش کی فوری نوٹس لینی چائیے۔حزب سربراہ نے اس یقین کا اظہار کیا کہ ہماری جدوجہد حصول منزل تک جاری رہیگی۔

Recommended For You

About the Author: admin