مودی کے منصوبوں سے مقبوضہ کشمیرکے وجودکو خطرات لاحق ہیں،سید صلاح الدین

مظفر آباد: متحدہ جہاد کونسل کے چیئرمین اور حزب المجاہدین کے سربراہ سید صلاح الدین نے کہا ہے کہ مودی حکومت کے منصوبوں سے مقبوضہ جموں وکشمیرکے وجود اور مسلم اکثریتی تشخص کو شدید خطرات لاحق ہیں درپیش حالات کا فوری اورشدید تقاضا یہ ہے کہ پاکستان اور آزاد کشمیر کی قیادت اور قوم بھارتی عزائم اور اقدامات کا موثر توڑ کرنے کیلئے برسرپیکار حریت پسند کشمیری عوام کی بھرپوراور ٹھوس امداد کرے .

ایک ویڈیو پیغام میں سید صلاح الدین نے کہاکہ مودی سرکار طے شدہ منصوبے کے مطابق مقبوضہ ریاست جموں و کشمیرمیں لاکھوں غیرریاستی بھارتی باشندوں کو ڈومیسائل اجراء کرکے مسلم آبادی کا تناسب تیزی سے تبدیل کررہی ہے اور دوسری طر ف اس کو اپنی سرزمین سے فلسطینیوں کی طرح بے دخل کرنے کے لئے قانونی اقدامات بھی کررہی ہے ۔

مزید پڑھیں:بھارتی اقدامات سے ریاست کشمیرکا وجود خطرے میں ہے،سید صلاح الدین

چند روز پہلے بڈگام کی سرحدی پٹی کندجن میں زائد از سوسال سے سکونت پذیر گجربرادری اور بکروال کی رہائشگاہوں کو منہدم اور باغات کو تہہ تیغ کرنااسی مسلم کش پالیسی کی ایک خطرناک کڑی ہے.

انہوں نے کہاکہ  زائد از سترہ مہینوں سے نولاکھ قابض فورسزکے نرغے میں لاک ڈاون اور کریک ڈاون سے نڈھال حریت پسند عوام روزو شب کشت و خون اور معاشی بدحالی کا سامنا کررہے ہیں تاکہ ان کی قوت مزاحمت کمزور اورجذبہ آزادی سرنگوں ہوجائے۔

حزب سربراہ نے کہاکہ کم وبیش ساری تحریکی قیادت اور ہزاروں کارکنان ریاست سے باہربھارت کے تعذیب خانوں میں پابند سلاسل بنیادی سہولیات سے محروم موت وحیات کی کشمکش سے نبرد آزما ہیں اس انتہائی گھمبیر اور قیامت خیز صورتحال پر پردہ پوشی اور عالمی برادری کو گمراہ کرنے کیلئے لاکھوں فورسز کے بل بوتے پرلوکل باڈیز  کا انتخابی  ڈھونگ رچایا گیاہے جبکہ دہلی سرکار جانتی ہے کہ اگر قابض فورسز کو چند لمحات کیلئے بیرکوں میں بھیج دیاجائے تو وہ ریاستی لوگوں کے غیض و غضب اور قہر کا سامنا نہیں کرپائے گی ۔

سید صلاح الدین نے کہاکہ بدقسمتی سے عالمی طاقتوں کی غیرجانبدارانہ اور مجرمانہ خاموشی اور نام نہاد اوآئی سی کی مناف قانہ اور بے اثرکارکردگی سے بھی بھارتی اقدامات اور عزائم کو تقویت ملتی ہوئی نظر آرہی ہے بالاختصاروطن عزیزکے وجود اور مسلم اکثریتی تشخص کو گزرتے لمحات کے ساتھ ساتھ جان لیوا خطرات لاحق ہوتے جارہے ہیں۔

سید صلاح الدین نے کہاکہ درپیش حالات کا فوری اورشدید تقاضا یہ ہے کہ مملکت خدداد پاکستان اور آزاد کشمیر کی قیادت اور قوم بھارتی عزائم اور اقدامات کا موثر توڑ کرنے کیلئے برسرپیکار حریت پسند کشمیری عوام کو بھرپوراور ٹھوس امداد بہم پہنچائے تاکہ زائد از پانچ لاکھ شہدائے وطن کے لہو سے سینچی ہوئی 73 سالہ تحریک آزادی کو اپنی منزل سے ہمکنار  کیا جائے ورنہ خدانخواستہ مزید کسی مصلحت پرستانہ تساہل اور عافیت پسند طرزعمل کے نتیجے میں انسانی تاریخ کاسب سے بڑا المیہ واقعہ ہوسکتا ہے

Recommended For You

About the Author: admin