غیر ریاستی باشندوں کو ڈومیسائل اجرا

مظفر آباد(پ۔ر)
5اکتوبر2020
غیر ریاستی باشندوں کو ڈومیسائل اجراء کرکے ریاست جموں و کشمیر کے مسلم اکثریتی تشخص کو خطرے میں ڈالا جارہا ہے۔عالمی برادری اور ادارے محض تماشائی نہ بنیں۔ان خیالات کا اظہار متحدہ جہاد کونسل کے ترجمان سید صداقت حسین نے پریس کے نام جاری اپنے ایک بیان میں کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ مودی سرکار نے بین الاقوامی قرادادوں اور اصولوں کو روندتے ہوئے لاکھوں غیر ریاستی باشندوں کو ڈومیسائل اجراء کرکے ریاستی وجود اور اس کے مسلم اکثریتی تشخص کو نہ صرف خطرے میں ڈالا ہواہے بلکہ اسرائیلی طرز پر کشمیریوں کو اپنی جائیداد اور سرزمین سے ہی بے دخل کرنے کی منصوبہ بند سازش کی جا چکی ہے۔ان حالات میں اگر عالمی برادری خاموش تماشائی کا کردار ادا کررہی ہے تو یہ انتہائی افسوسناک عمل ہے۔عالمی اداروں کی یہ پر اسرارخاموشی بھارت کے سامراجی عزائم کو تقویت پہنچا رہی ہے۔اور اس سے یہ ادارے اپنی اعتباریت بہت تیزی سے کھو رہے ہیں۔ترجمان نے کہا کہ ان حالات میں ایک فیصلہ کن ریاست گیر مسلح مزاحمت کے ذریعے سے ہی بھارتی اقدامات کو روکا جا سکتا ہے۔کیونکہ زبانی جمع خرچی اور احتجاج و قراردادوں سے قابض قوتیں ٹس سے مس نہیں ہورہی ہیں۔متحدہ جہاد کو نسل کے ترجمان نے حکومت پاکستان سے بھی اپیل کی کہ ان حالات میں جب مودی سرکار جنت ارضی جموں کشمیر کو ہڑپ کرنے کے منصوبے پر عمل پیرا ہے اور بین الاقوامی قرادادوں کا پاس لحاظ نہیں کرتی،پاکستا ن ایسا ہی الزام اپنے سر بھی نہ لے لے۔کیو نکہ، گلگت و بلتستان کو صوبہ قرار دینا یو این او کی قراردادوں کو بلڈوز کرنے کے مترادف ہے۔اس طرح کے عاقبت نا اندیش اقدام سے بھارتی عزائم اور کاروائیوں کو جواز فراہم ہوگا اور جس کے تحریک آزادی کشمیر پر منفی اثرات مرتب ہونگے۔گلگت بلتستان کے عوام کی شکایات کا ازالہ بہت سے طریقوں سے کیا جا سکتا ہے اور ان کو سیاسی معاشی اور انتظامی حقوق و اختیارات صوبہ بنائے بغیر بھی دیے جا سکتے ہیں۔ترجمان نے اپنے بیان میں ہفتہ رفتہ کے شہداء کو زبردست خراج عقید ت ادا کرتے ہوئے اس یقین کا اظہار کیا کہ یہ مقدس خون رائگان نہیں جائیگا اور اسی مقدس خون کے طفیل وطن عزیز قابض کے چنگل سے آزاد ہوگا۔ان شا ء اللہ
سید صداقت حسین
ترجمان متحدہ جہاد کونسل

Recommended For You

About the Author: admin